مولوی صاحب

مولوی کا مطلب  تھانوی صاحب کی نظر میں

مولوی اسی کو کہتے ہیں جو مولا والا ہو یعنی علم دین بھی رکھتا ہو اور متقی بھی ہو، خوف خدا وغیرہ، اخلاق حمیدہ بھی رکھتا ہو۔ صرف عربی جاننے سے آدمی مولوی نہیں ہوتا چاہے وہ کیسا ہی آدیب ہو عربی میں تقریر بھی کر لیتا ہو تحریر بھی لکھ لیتا ہو کیونکہ عربی دان تو ابو جہل بھی تھا بلکہ وہ آج کل کے ادیبوں سے زیادہ عربی دان تھا، تو وہ بڑا محقق عالم ہونا چاہیئے حالانکہ اس کا نام ہی ابو جہل تھا۔ معلوم ہوا کہ صرف عربی دان کا نام مولویت نہیں۔ ( تحفۃ العلماء ص55